اسلام آباد ( )صدر آزاد جموں و کشمیر سردار مسعود خان نے کہا ہے

اسلام آباد ( )صدر آزاد جموں و کشمیر سردار مسعود خان نے کہا ہے کہ پاکستان کا قومی میڈیا مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھارتی مظالم کو اُجاگر کرنے اور تحریک آزادی کشمیر کو اس کی حقیقی تاریخی تناظر میں پیش کرنے کے لیے اپنا کردار ادا کرے ۔ بھارت کا متعصب اور جانبدار میڈیا کشمیر میں انسانیت کے خلاف جرائم پر آواز اٹھانے کے بجائے الٹا پاکستان کو اس کا ذمہ درا ٹھہرا رہا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پاکستان کے مختلف میڈیا تنظیموں میں کام کرنے والے مقبوضہ جموں و کشمیر کے صحافیوں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ غلام نبی بیگ اور رئیس احمد میر کی قیادت میں ملنے والے کشمیری صحافیوں کے وفد نے صدر آزاد کشمیر سے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں ، بھارتی فوج کی طرف سے بے گناہ شہریوں اور سیاسی کارکنوں کی غیر قانونی گرفتاریوں اور بین الاقوامی سطح پر مسئلہ کشمیر کو صحیح تناظر میں اُجاگر کرنے سمیت مختلف موضوعات پر تبادلہ خیال کیا ۔ صدر آزاد کشمیر نے کہا کہ ہمیں بین الاقوامی برادری کی بے حسی سے قطع نظر تحریک آزادی کشمیر کو اُجاگر کرنے کے لیے اپنی مسلسل کوششیں جاری رکھنا ہوں گی اور ایک لمحہ کے لیے بھی تھک ہار کر نہیں بیٹھنا اور دنیا کے ہر فورم اور پلیٹ فارم پر جا کر دروازہ کھٹکھٹانا ہے اور دنیا کو اپنی مظلومیت اور بھارت کے ظلم کی کہانی سنانی ہے انہوں نے کشمیری صحافیوں پر زور دیا کہ وہ جس جس ادارے میں کام کر رہے ہیں وہاں میڈیا مالکان ، ادارتی سٹاف اور ہم پیشہ صحافیوں کو مسلسل کشمیر کی صورتحال کی طرف متوجہ کرتے رہیں اور پھر ایک وقت آئے گا جب آپ کی کہانی ہر کوئی سننے کے لیے مجبور ہو جائے گا ۔ مقبوضہ جموں و کشمیر کے صحافیوں کے مختلف سوالات کا جواب دیتے ہوئے صدر سردار مسعود خان نے کہا کہ ہم ایسی حکمت عملی پر غور کریں گے کہ مقبوضہ جموں و کشمیر اور آزاد کشمیر سے تعلق رکھنے والے صحافیوں ، دانشوروں ، خواتین اور ماہرین تعلیم کی دنیا کے مختلف خطوں میں بھیج کر تنازعہ کشمیر اور مقبوضہ کشمیر میں بھارتی بر بریت کو اُجاگر کیا جائے ۔ انہوں نے مقبوضہ جموں و کشمیر اور بھارتی جیلوں میں قید آسیہ اندرابی ، ناہیدہ نسیم سمیت بارہ خواتین اور دیگر سیاسی کارکنوں کی گرفتاری اور نظر بندی کی شدید مذمت کرتے ہوئے بھارتی حکومت سے اُن کی فوری رہائی کا مطالبہ بھی کیا ۔

Download as PDF